718

جادوگری کا انجام – پادری کرامت مسیح

جادوگری ایک بہت ہی غلط عمل ہے جس کی مشق کرکے لوگ ایک دوسرے کو نقصان پہنچاتے ہیں۔
بائبل مقدس میں ایسے لاتعداد واقعات ملتے ہیں جو جادوگری کرنے والوں اور کروانے والوں کا ذکر بیان کرتے ہیں۔

شگون لینے والے (دانی ایل 27:2)
فالگیر (استثنا 14:18)
افسوں گر (یرمیاہ 9:27)
جنات کے آشنا (١ سموئیل۔3:28)
جادوگرنیاں (خروج 18:22)
منتری، منجم، ساحر وغیرہ۔

موجودہ زمانہ میں تمام کام عروج پر ہیں؛
کسی کی اولاد نہ ہو۔
ناجائزرشتہ جوڑنا ہو۔
نوکری نہ ملتی ہو۔
یا کسی کا نقصان کروانا ہو۔
کسی کو اپنے قبضہ میں کرنا ہو۔
یا بیرونِ ملک جانے کے لیے ویزہ لگوانا ہووغیرہ وغیرہ ۔
ایسے اور بہت سے کام ہیں جو انسان صرف اپنے ہی فائدے کیلئے کرتا اور کرنا چاہتاہے اور ان کے لئے جادوگروں کی مدد لیتا ہے۔
لوگ اپنے آنے والے کل کے بارے میں جاننا چاہتے ہیں اور یہ کہ میرا آج کا دن کیسا ہوگا میں آج کون سےرنگ کے کپڑے پہنوں کہ میرا دن اچھا گزرے۔
کونسا پتھر کونسی انگلی میں پہنوں کہ مجھے زیادہ سے زیادہ پیسے مل جائیں ۔
ان سب باتوں کے لئے لوگ جادوگروں کے پاس جاکر قسمت کا حال پوچھتے ہیں اور وہ ان کو جھوٹ موٹ کی کہانیاں سنا کر ان کے مال اور ایمان سے کھیلتے ہیں۔
جادوگر آنے والے کل کے بارے میں بتاتے ہیں جبکہ وہ اپنے ہی آنے والے کل کے بارے میں نہیں جانتے کہ ان کے ساتھ کیا ہو گا۔ خدا نے سزا کے لئے ایک دن مقرر کیا ہے جس میں وہ قہر کے ساتھ ان کی عدالت کرے گا۔

کچھ بھی پانامشکل ہے
کچھ مثالیں ملاحظہ ہوں،
جادوگر کہتے ہیں کہ اولاد پانے کیلئے کالا بکرا جس کے سینگ برابر ہوں۔ اُس کو قربان کر کے اُسکی گردن فلاں قبرستان میں رات بارہ بجے کے بعد فلاں قبر کھود کر دفناؤ اور خیال رکھنا کہ کوئی وہاں آتا جاتا نہ ہو۔
اسی طرح نوجوان لڑکے لڑکیوں کو بیوقوف بنایا جاتا ہے کہ پسند کی شادی کے لئے دو ہزار کلومیٹر کے فاصلہ پر ایک بہت ہی پُرانا دربار/مندر ہے جس کی تین سو سیڑیاں ہیں۔ اگر کوئی پیٹ اور ماتھا رگڑ رگڑ کر وہ سیڑھیاں چڑھے اور اس دربار/مندر میں دعا مانگی جائے تو من پسند کی شادی ہوسکتی ہے۔
عزیزو، یاد رکھیں ایسے کام کرنے سے خدا سخت ناراض اور غضب ناک ہوتا ہے کیونکہ ایسا کرنے سے ہم زندہ خدا کو چھوڑ کر غیر معبودوں کی پرستش کرتے ہیں۔
خدائے غیور نے جادوگروں اور اُنکے ماننے والوں کے لئے جلتی ہوئی آگ کی جھیل تیار کی ہے جس میں اُن پر عذاب کا دھواں ہمیشہ اُٹھتا رہے گا۔ بیشک آمین!
گلتیوں 5: 19-21، مکاشفہ 21: 7-8، 15:22

ان سب سےبچنےکاحل
بائبل مقدس میں لکھا ہے،
پس خدا کےقوی ہاتھ کے نیچے فروتنی سے رہو تاکہ وہ تمہیں وقت پر سربلندکرے اور اپنی ساری فکر اسی پر ڈال دو کیونکہ اس کو تمہاری فکر ہے (ا پطرس 5: 6-7)۔
حضرت ابرہام کی زندگی پر غور کریں، وہ اور اس کی بیوی سارہ عمررسیدہ تھے اور اُن کے اولاد نہ تھی۔ابرہام کسی پیر یا فقیر یا کسی جادوگر کے پاس نہیں گیابلکہ خدا پر ایمان رکھا اورآج اسی ایمان کی وجہ سےقوموں کا باپ کہلاتا ہے۔
اسی طرح اضحاق کی بھی جب شادی کی عمر ہوئی تو اس نے اپنے جیون ساتھی کیلئے زندہ خدا سے دعا کی۔
بائبل مقدس خدا کے جلالی کاموں،ایسے واقعات اور گواہیوں سے بھری پڑی ہے۔ بس آپ کو غور کرنے کی ضرورت ہے۔خدا ہر کام اور ہرایک ضروت پوری کرنے میں قادر ہے۔
آئیں، جادوگروں کو چھوڑ کر زندہ خدا سے مانگیں اور وہ آپ کی ہرجائز ضرورت کو پورا کرے گا۔
خدا آپ کو ایسا کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔آمین۔

پادری کرامت مسیح
ستلج ریفارمڈچرچ آف پاکستان
نیو اسلامی کالونی بہاول پور۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں